ہفتہ، 29 مارچ، 2014

دیتے ہیں یہ فیس بکرز دھوکا کھلا..

دیتے ہیں یہ فیس بکرز دھوکا کھلا..


کافی عرصہ پہلے ایک فلم دیکھی تھی surrogates جسمیں ایک ایسا زمانہ دکھایا گیا تھا جب لوگ عملی زندگی گزارنا ختم کر دیتے ہیں اور انکے "متبادل " دنیا میں چلتے پھرتے ہیں اور اصل بندہ اپنے گھر سے بیٹھا کمپیوٹر کے ذریعہ اپنے "سروگیٹ " کو کنٹرول کرتا ہے ..یہ ١٦ سالہ حسینہ ہے لیکن اسکے پیچھے کوئی اسی سالہ بڑھیا.یہ ایک ورزشی بدن کا نو جوان لیکن اصل میں کھڑوس بڈھا.....یہ ایک حسین دوشیزہ لیکن اصل میں کالی مائی ...یہ یہ یہ یہ .......


ایسی ہی کہانی ہمارے فیس بک کی بھی ہے دنیا کا سب سے معروف سوشل میڈیا سب سے زیادہ بہروپیا اور دھوکے باز بھی ہے ......خوبصورت آئ ڈیز کے دھوکے میں نہ آئیں پردہ کے پیچھے کوئی بھی ہو سکتا یا سکتی ہے ....یا پھر اوئی الله ہاۓ الله آئٹم کا ہونا بھی ممکن ہے


"ہیں کواکب کچھ نظر آتے ہیں کچھ"انتہائی ثقہ قسم کے واعظ کوئی کلین شیو کوٹ پتلون بھی ہو سکتے ہیں اور اچھل پڈو قسم کے جوان کے پیچھے نستعلیق و باریش صوفی صاحب بھی نمودار ہو سکتے ہیں ..یہ فیس بک کی حسینہ عالم ہے ممکن ہےیہ کوئی دو من کی بھینس نکلے .ملکی سطح کے سیاسی فیصلے فرمانے والے بشیر چپراسی ہوں یہ بھی غیر ممکن نہیں .


فیک آئ ڈی آخر بنائی ہی کیوں جاتی ہے ....کسی کے لیے پردہ یا کسی کا پردہ . کسی بہروپ کے پیچھے دو طرح کے لوگ ہوتے ہیں .......پہلے وہ جو کچھ چھپانا چاہتے ہیں کوئی فائدہ حاصل کرنا چاہتے ہیں یا شاید دھوکہ دیتے ہیں کبھی خود کو کبھی دوسروں کو .......دوسرے وہ جو لوگوں کا سامنا کرنے سے کتراتے ہیں کسی محرومی یا احساس کمتری کی وجہ سے ......دو مختلف قسم کے لوگوں کے لیے ..مختلف رویہ ہونا چاہئیے ...لیکن یہ پہچان ہے کسی کے پاس .............شاید نہیں .


مختلف گروپس کے اڈمن حضرات بھی فیک آئ ڈیز کے پیچھے چھپے دکھائی دینگے ...آپ کا گروپ ہے آپ کے دوست ایڈ ہیں پھر یہ پردہ کیوں شاید یہ پردہ اس لحاظ سے اچھا ہے کہ دوستیاں خراب کئے بغیر دوستوں کے خلاف کاروائی کی جا سکتی ہےوجہ کوئی بھی ہو اس فیس بک کی دنیا میں فیک آئ ڈیز کی بہتات ہے ......لیکن ان ہی جھوٹے چہروں کے پیچھے کچھ اچھے لوگ بھی چھپے بیٹھے ہیں بس ڈھونڈنے کی دیر ہے .


حسیب احمد حسیب
ایک تبصرہ شائع کریں