بدھ، 12 مارچ، 2014

محبت !

محبت !

مجھے تم سے محبت ہے 
بہت آسان ہے کہنا 
بہت آسان ہے کہنا 
مجھے تم سے محبت ہے 
مگر 
کیا جانتے ہو تم .....؟
محبت کے تقاضے ہیں 
محبت کے تقاضوں کو 
تمہیں پورا بھی کرنا ہے
یہ بس اقرار کے چند حرف
چند الفاظ چاہت کے
مجھے تم سے محبت ہے
بہت آسان ہے کہنا
محبت سوچ ہے احساس ہے
اک بوجھ ہے دل کا
محبت اک شرارت ہے
محبت اک شکایت ہے
یہ انہونی حکایت ہے
اسے تم کھیل مت سمجھو
محبت کے تقاضے ہیں
محبت کے تقاضوں کو
تمہیں پورا بھی کرنا ہے
مگر کیا جانتے ہو تم
محبت کی کہانی میں
بڑی بے چین راتیں ہیں
بڑی بے درد گھاتیں ہیں
محبت اک عجوبہ ہے
محبت کو سمجھنے میں
ابھی کچھ دیر باقی ہے
ابھی کچھ درد سہنے ہیں
ابھی کچھ غم بھی آنے ہیں
مجھے تم سے محبت ہے
بہت آسان ہے کہنا
بہت آسان ہے کہنا
مجھے تم سے محبت ہے
مگر
کیا جانتے ہو تم .....؟

حسیب احمد حسیب
ایک تبصرہ شائع کریں