جمعہ، 29 اگست، 2014

تم بھی دیکھو گے ہم بھی دیکھیںگے

تم بھی دیکھو گے ہم بھی دیکھیںگے


 تم بھی دیکھو گے ہم بھی دیکھیںگ

بے لباسی لباس والوں کی

 

میری دھرتی میں ہے پزیرائی


تن کے گوروں کی من کے کالوں کی 

حسیب احمد حسیب

ایک تبصرہ شائع کریں