ہفتہ، 10 نومبر، 2012

عافیہ کے نام معذرت نامہ !








عافیہ کے نام معذرت نامہ !

قوم کی بیٹی ہمیں افسوس ہے 
کفر کے پنجہ میں تیری جان ہے 
ٹوٹتی ہیں روز تجھ پر ظلمتیں 
دور تجھسے ہو گئی ہیں نعمتیں 
ہم کو تیری مشکلوں پر دکھ تو ہے 
کیا کریں پر ہم بڑے معذور ہیں 
ہم کو اپنی زندگی سے پیار ہے 
تیری نصرت آج ہم پر بار ہے !
حسیب احمد حسیب 
ایک تبصرہ شائع کریں