اتوار، 1 جون، 2014

تجھے دیکھنے کے بعد ....

تازہ ہزل !

تجھے دیکھنے کے بعد ....

بوڑھا بھی کانپتا ہے تجھے دیکھنے کے بعد
بچہ بھی رو رہا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

قوت ہے تیرے حسن میں اتنی بڑھی ہوئی
چھت سے وہ گر پڑا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

جوتوں سے تیری خوب مرمت کیا کروں 
گھر تھانہ بن گیا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

کہتے ہیں لوگ تجھ کو جو بھتنا صحیح تو ہے
اک شخص مرگیا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

وہ فیل تن جوان جو طاقت میں تھا کمال 
بیمار پڑ گیا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

تن کر جو گھومتا تھا محلے میں بد قماش 
گھر میں چھپا ہوا ہے تجھے دیکھنے کے بعد 

واقف ہے تجھ سے جو تیرے طفلی کے عہد سے 
انجان بن رہا ہے تجھے دیکھنے کے بعد 

فرصت نہیں تھی جس کو کبھی کام کاج سے 
بے کار پھر رہا ہے تجھے دیکھنے کے بعد

بنتا تھا برد بار جو میں محفل کل حسیب 
ٹھٹھے لگا رہا ہے تجھے دیکھنے کے بعد 

حسیب احمد حسیب

ایک تبصرہ شائع کریں